ٹک ٹاک کا اوریکل کو فروخت معاملہ ‘غیرمعینہ مدت’ تک التوا کا شکار

مہلت ختم ہونے کے باوجود اس وقت ٹرمپ انتظامیہ نے امریکا میں ٹک ٹاک کے آپریشنز پر پابندی نہیں لگائی گئی، اور نہ ہی کوئی بیان جاری ہوا ہے کہ اب کیا ہوگا۔

0 7

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

امریکا نے چینی کمپنی بائیٹ ڈانس نے مقبول سوشل میڈیا ایپ ٹک ٹاک کی فروخت کے لیے 4 دسمبر 2020 تک کی مہلت دی تھی جو خاموشی سے گزر گئی۔

مہلت ختم ہونے کے باوجود اس وقت ٹرمپ انتظامیہ نے امریکا میں ٹک ٹاک کے آپریشنز پر پابندی نہیں لگائی گئی، اور نہ ہی کوئی بیان جاری ہوا ہے کہ اب کیا ہوگا۔

اب ایسا محسوس ہوتا ہے کہ نئے صدر جو بائیڈن کو اس معاہدے کو حتی شکل دینے میں کوئی جلدی نہیں۔

وال اسٹریٹ جرنل نے ایک رپورٹ میں بتایا کہ ٹک ٹاک کی اوریکل اور وال مارٹ کو فروخت کے معاملے کو ‘غیر معینہ مدت’ کے لیے التوا میں ڈال دیا گیا ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

Privacy & Cookies Policy