مہیڑ: 3 سال قبل قتل ہونے والے کرم اللہ چانڈیو کے قاتل تاحال گرفتار نا ہو سکے

میہڑ میں قتل ہونے والے یوسی چیئرمین کرم اللہ چانڈیو، مختیار چانڈیو، قابل چانڈیو کے قتل کو آج 3 سال مکمل ہوگئے لیکن قاتل اب تک گرفتار نہ ہوسکے۔ تین سالوں میں قاتل گرفتار نہ کرنے کے خلاف اُم رباب چانڈیو کی راہنمائی میں تمن دار ہاؤس سے گھنٹہ گھر تک ریلی نکالی گئی۔

0

خیر پور ناتھن شاہ (رجب علی کھوھارو، میڈیا رپورٹر) ― تین سال قبل قتل ہونے والے کرم اللہ چانڈیو اور ان کے دونوں بیٹوں مختیار چانڈیو اور قابل چانڈیو کے قاتلوں کی گرفتاری کے لیئے مظاہرہ مہیڑ میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔

میہڑ میں قتل ہونے والے یوسی چیئرمین کرم اللہ چانڈیو، مختیار چانڈیو، قابل چانڈیو کے قتل کو آج 3 سال مکمل ہوگئے لیکن قاتل اب تک گرفتار نہ ہوسکے۔ تین سالوں میں قاتل گرفتار نہ کرنے کے خلاف اُم رباب چانڈیو کی راہنمائی میں تمن دار ہاؤس سے گھنٹہ گھر تک ریلی نکالی گئی۔

اس موقعی پر اُم رباب چانڈیو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کے 3 سال گذرنے کے باوجود پولیس قاتل گرفتار کرنے میں مکمل ناکام ہو چکی ہے۔ سپریم کورٹ کے نوٹس لینے کے باوجود قتل میں نامزد ملزم مرتضی چانڈیو گرفتار نا ہوسکا۔

پاک ایشیا ویب چینل کے مطانق مظاہرین کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت قتل کیس میں نامزد ملزمان کو پشت پناہی کر رہی ہے اور ہمارے آبائی زمینوں پر قبضہ کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ اُم رباب چانڈیو نے پاک ایشیا ویب چینل سے گفت گو کرتے ہوے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ پاکستاں کی عدالتیں مجھے انصاف فراہم ضرور کریں گیں اور میرے خاندان کو ضرور انصاف ملے گا۔ اس موقع پر کشمیر سے آئی ہوئے عالم شاہ اور سول سوسائٹی کے دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا۔ 

مزید تفصیلات دیکھیں پاک ایشیا کے میڈیا رپورٹر "رجب علی کھوھارو” کی اس رپورٹ میں:

تبصرے