اسلام آباد ہائیکورٹ پر حملے کے واقعے کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی بنانے کا فیصلہ

وفاقی دارالحکومت کی عدالت عالیہ میں چیف جسٹس اطہر من اللہ نے اسلام آباد ہائیکورٹ پر حملے کے بعد وکلا کی پکڑ دھکڑ سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

0 6

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اسلام آباد ہائی کورٹ نے پولیس کی تجویز پر عدالت عالیہ پر حملے کے واقعے کی تحقیقات کے لیے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) بنانے کا فیصلہ کرلیا۔

وفاقی دارالحکومت کی عدالت عالیہ میں چیف جسٹس اطہر من اللہ نے اسلام آباد ہائیکورٹ پر حملے کے بعد وکلا کی پکڑ دھکڑ سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

سماعت کے دوران چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ آپ سب کو پتا ہے وہ کون لوگ تھے جنہوں نے یہاں حملہ کیا، میں نے خط لکھا ہے، اب ریگولیٹر کی جانب دیکھ کر رہے ہیں وہ کیا کرتے ہیں۔

چیف جسٹس نے کہا کہ اس احتجاج کی ضرورت ہی نہیں تھی جب سے میں چیف جسٹس بنا ہو تب سے کچہری کے لیے کام کر رہا ہوں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Comment moderation is enabled. Your comment may take some time to appear.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

Privacy & Cookies Policy