مسلسل چوتھے روز ملک میں 4 ہزار سے زائد کورونا کیسز رپورٹ

وائرس کی تشخیص کے لیے 26 مارچ کو مجموعی طور پر 40 ہزار 369 ٹیسٹس کیے گئے جس کے نتیجے میں ملک میں کورونا کیسز مثبت آنے کی شرح 11.2 فیصد تک جا پہنچی اور فعال کیسز بھی 46 ہزار 663 تک بڑھ گئے۔

0 19

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

پاکستان میں کورونا وائرس کی تیسری لہر کے دوران بیماری کے پھیلاؤ میں شدت آگئی ہے اور پنجاب میں صورتحال زیادہ خراب ہونے کے باعث 12 فیصد مثبت شرح والے اضلاع میں 11 روزہ لاک ڈاؤن سمیت مختلف پابندیاں عائد کردی گئی ہیں۔

کووِڈ 19 کے اعداد و شمار کے لیے بنائی گئی نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کی ویب سائٹ کے مطابق پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 4 ہزار 525 نئے کیسز سامنے آئے اور 41 مریض انتقال کر گئے۔

وائرس کی تشخیص کے لیے 26 مارچ کو مجموعی طور پر 40 ہزار 369 ٹیسٹس کیے گئے جس کے نتیجے میں ملک میں کورونا کیسز مثبت آنے کی شرح 11.2 فیصد تک جا پہنچی اور فعال کیسز بھی 46 ہزار 663 تک بڑھ گئے۔

ملک بھر میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 6 لاکھ 59 ہزار 116 ہو چکی ہے جبکہ مرنے والوں کی تعداد بھی 14 ہزار 256 تک پہنچ گئی۔

گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران 2 ہزار 268 مزید مریض صحتیاب بھی ہوئے اور اب تک صحتیاب افراد کی مجموعی تعداد 5 لاکھ 98 ہزار 197 ہو گئی ہے، ملک میں صحتیابی کی شرح 90.89 فیصد ریکارڈ کی گئی۔

واضح رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری 2020 کو رپورٹ ہوا تھا، جس کے بعد سے ملک میں وبا کے پھیلاؤ میں اتار چڑھاؤ جاری ہے اور اب تک بیماری کی 2 لہریں دیکھی جاچکی ہیں۔

دریں اثنا ملک میں وائرس کی تیسری لہر کے پیشِ نظر کئی علاقوں میں دوبارہ لاک ڈاؤن اور اسمارٹ لاک ڈاؤن لگایا گیا ہے جبکہ کاروباری سرگرمیوں کے اوقات کار بھی محدود کردیے گئے ہیں اس کے علاوہ زیادہ متاثرہ علاقوں میں تعلیمی ادارے بھی بند ہیں۔

پاکستان میں آج 29 مارچ کو چاروں صوبوں اور وفاقی اکائیوں میں کورونا وائرس کے کیسز سے متعلق رپورٹ کچھ یوں ہے:

پنجاب

وبا کی تیسری لہر نے صوبہ پنجاب کو سب سے زیادہ متاثر کیا ہے اور گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 2 ہزار 309 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی جبکہ 17 مریض انتقال کر گئے۔

پنجاب میں اب تک مجموعی کیسز کی تعداد 2 لاکھ 15 ہزار 227 تک پہنچ چکی ہے جبکہ اب تک 6 ہزار 246 افراد موت کے منہ میں جا چکے ہیں۔

سندھ

ملک کے دوسرے بڑے صوبے سندھ میں ابھی تک صورتحال نسبتاً بہتر ہے اور یہاں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 282 کیسز رپورٹ ہوئے جس کے بعد مجموعی کیسز کی تعداد 2 لاکھ 64 ہزار 889 ہو گئی ہے۔

صوبے میں کورونا وائرس سے مزید کسی مریض کا انتقال نہیں ہوا جبکہ مجموعی طور پر اب تک 4 ہزار 491 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

خیبر پختونخوا

صوبہ خیبر پختونخوا میں بھی بیماری کا پھیلاؤ شدت اختیار کر گیا ہے اور کئی ماہ بعد یہاں 922 نئے کیسز سامنے آئے اور 18 مریض دم توڑ گئے۔

خیبر پختونخوا میں اب تک کیسز کی مجموعی تعداد 85 ہزار 531 ہو چکی ہے جبکہ مجموعی طور پر 2 ہزار 301 اموات ہوئیں۔

بلوچستان

بلوچستان میں کئی روز کے بعد یومیہ کیسز کی تعداد ایک مرتبہ پھر تھوڑی سی بڑھتی ہوئی دکھائی دی اور 28 کیسز سامنے آئے۔

صوبے میں مزید کسی مریض کا اس وبا کے باعث انتقال نہیں ہوا اور اب تک مجموعی طور پر 19 ہزار 525 کیسز جبکہ 206 اموات رپورٹ ہوچکی ہیں۔

اسلام آباد

اسلام آباد میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 856 کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ مزید 2 مریض انتقال کر گئے۔

وفاقی دارالحکومت میں اب تک 56 ہزار 450 افراد وائرس کا شکار اور 561 موت کے منہ میں جا چکے ہیں۔

آزاد کشمیر

آزاد کشمیر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 117 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی جبکہ 4 مریض دم توڑ گئے۔

یہاں اب تک 12 ہزار 484 افراد میں وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے جبکہ مجموعی طور پر 348 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

گلگت بلتستان

گلگت بلتستان میں ملک کے دیگر حصوں کی مناسبت سے بیماری کا پھیلاؤ کافی حد تک کنٹرول میں ہے تاہم گزشتہ روز 11 نئے کیسز رپورٹ ہوئے یوں مجموعی کیسز 5 ہزار 10 ہوگئے۔

گلگت بلتستان میں 9 مارچ کے بعد سے مزید کسی مریض کا انتقال نہیں ہوا اور اموات کی تعداد 103 پر برقرار ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

Privacy & Cookies Policy