پاک وطنتازہ ترین

ہندوستان کی پالیسیاں امن کیلئے خطرہ ہیں، امریکا کو کردار ادا کرنا چاہیے، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ہندوستان میں بر سر اقتدار جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی انتہاپسندانہ پالیسیاں علاقائی امن کیلئے خطرہ ہیں، امریکا کو خطے میں امن و استحکام کیلئے کردار ادا کرنا چاہیے۔

وزیراعظم عمران خان سے اسلام آباد میں امریکی سینیٹ کے چار  رکنی وفد نے ملاقات کی ہے۔ اس موقع پر  وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاک امریکا مضبوط شراکت داری خطے کے امن، سلامتی، خوشحالی کیلئے اہم ہے۔

وزیر اعظم نے وفدکو مقبوضہ جموں  و کشمیر میں بھارتی فوج کی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے آگاہ کیا۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی انتہا پسندانہ اور خارجہ پالیسیاں علاقائی امن اور سلامتی کیلئے خطرہ ہیں، امریکا کو  خطے میں امن و استحکام کے لیے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان خطےمیں امن، استحکام ، خوشحالی کو تقویت دینے والے اقدامات کیلئے تیار ہے۔

ملاقات میں افغانستان میں بدلتی ہوئی صورتحال کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

PM-IK-With-US-Delegation
چار رکنی وفد میں امریکی سینیٹرز انگس کنگ، رچرڈ بر، جان کارنائن اور بن یامین سیسی شامل تھے— فوٹو: پی آئی ڈی

چار  رکنی وفد میں امریکی سینیٹرز انگس کنگ، رچرڈ بر، جان کارنائن اور بن یامین سیسی شامل تھے۔

وزیر اعظم میڈیا آفس کی جانب سے جاری بیان کے مطابق امریکا کے یہ چاروں سینیٹرز امریکی سینیٹ کی انٹیلی جنس کمیٹی کے اراکین ہیں جبکہ سینیٹر انگس کنگ سینیٹ کی آرمڈ سروسز کمیٹی کے رکن بھی ہیں۔

پاک امریکا باہمی تعلقات میں مزید اضافے کیلئے پر عزم ہیں، وزیراعظم

امریکی سینیٹرز کے وفد کا استقبال کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان امریکا کے ساتھ طویل تعلقات رکھتا ہے اور اقتصادی شعبہ سمیت دیگر تمام شعبوں میں پاک امریکا باہمی تعلقات میں مزید اضافے کیلئے پر عزم ہے۔

انہوں نے توقع ظاہر کی کہ امریکی قانون سازوں کے وفد کے دورے سے باہمی اعتماد کے استحکام میں مدد حاصل ہوگی اور عوامی رابطوں میں بھی بہتری آئے گی۔

وزیر اعظم عمران خان نے  افغانستان کی حالیہ صورتحال کے تناظر میں کہا کہ امن ، سلامتی اور معاشی ترقی کے مشترکہ مقاصد کے حصول کیلئے پاک امریکا باہمی رابطوں میں اضافہ ضروری ہے۔

’بھارت سازگار ماحول کی فراہمی یقینی بنائے تو پاکستان خطے میں امن کیلئے کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہے‘

انہوں نے افغان عوام کی فوری مدد کی ضرورت پر خصوصی زور دیتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے ہر طرح کے ممکنہ اقدامات کی ضرورت ہے تاکہ کسی انسانی اور معاشی بحران سے بچا جا سکے۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ خطے میں دہشتگردی سمیت سکیورٹی کے خدشات کے حوالہ سے قریبی تعاون ضروری ہے ۔

غیر قانونی بھارتی مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف وریوں کے حوالہ سے انہوں نے کہا کہ آرایس ایس کی انتہا پسندانہ اور انسانی حقوق کی مانع سوچ پرمبنی بی جے پی کے اقدامات سے خطے کے امن اور ستحکام کو سنگین خدشات درپیش ہیں، انہوں نے زور دیا کہ امریکا خطے میں امن و استحکام کیلئے اپنا کردار لازمی طور پرادا کرے۔ 

وزیر اعظم نے کہا کہ اگر بھارت سازگار ماحول کی فراہمی یقینی بنائے تو پاکستان خطے میں امن ، استحکام اور خوشحالی کیلئے اپنا کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہے۔

عالمی سطح پر امن و سلامتی کے فروغ کیلئے پاکستان اور امریکا کی دہائیوں پر مشتمل مشترکہ جدوجہد کا حوالہ دیتے ہوئے سینیٹرز نے 15اگست کے بعد افغانستان سے امریکی اور دیگر غیر ملکی شہریوں کے محفوظ انخلا کے حوالے سے پاکستان کے حالیہ کردار کو سراہا۔

امریکی سینیٹرز نے پاکستان اور امریکا کے باہمی تعلقات میں استحکام اور وسعت کے حوالے سے اپنے عزم کا اعادہ بھی کیا۔ پاکستان کی آبادی اور جیو  اسٹریٹجک جغرافیہ کے تناظر میں امریکی سینیٹرز نے کہا کہ امریکا اورپاکستان کو تجارت ، سرمایہ کاری اور معاشی تعاون کے فروغ کیلئے کاوشوں کو وسعت دینی چاہیے۔

خیال رہے کہ گذشتہ دنوں پاکستان نے امریکا کےجمہوریت پر منعقدہ سمٹ میں شرکت سے معذرت کرلی تھی اور اس حوالے سے ترجمان دفترخارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ سربراہی کانفرنس میں شرکت کیلئے مدعو کرنے پر امریکا کے شکرگزار ہیں، ہم امریکا کے ساتھ اپنی شراکت کو  قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں جسے ہم دو طرفہ اور علاقائی اور بین الاقوامی تعاون کے لحاظ سے مزیدبڑھانا چاہتے ہیں، ہم کئی معاملات پر امریکا کے ساتھ رابطے میں رہتے ہیں ۔

ترجمان نے کہا کہ پاکستان ہمارے مشترکہ اہداف کو آگے بڑھانے کے لیے بات چیت، تعمیری رابطوں اور بین الاقوامی تعاون کو مضبوط بنانے کے لیے تمام کوششوں کی حمایت جاری رکھے گا۔

 جمہوریت کے ‏موضوع پر امریکا کے زیر اہتمام سربراہی ورچوئل کانفرنس 9، 10دسمبر کو منعقد ہوئی۔


پاک ایشیا ویب ٹی وی کی براہِ راست نشریات دیکھیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button