fbpx
پاکستان سیاست

این اے 131 : سعد رفیق نے کاغذات نامزدگی “پھر” جمع کروا دیئے

لاہور: وزیراعظم عمران خان کی جانب سے قومی اسمبلی کی نشست 131 (لاہور) کی سیٹ چھوڑنے کے بعد ضمنی انتخابات میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ سعد رفیق نے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے۔

واضح رہے کہ 25 جولائی کے انتخابات میں مذکورہ حلقے میں عمران خان اور سعد رفیق کے درمیان سخت مقابلے دیکھنے کو ملا۔

عمران خان خواجہ سعد رفیق کے مقابلے میں صرف 600 ووٹ زیادہ لے کر کامیاب ہوئے تھے۔

اس حوالے سے بتایا گیا کہ خواجہ سعد رفیق نے اپنے نمائندے کے ذریعے کاغذات نامزدگی جمع کروائے۔

علاوہ ازیں سابق وزیر ریلوے کی اہلیہ غزالہ سعد نے بھی این اے 131 سے کاغذات نامزدگی جمع کروائے۔

اس سے قبل خواجہ سعد رفیق کی جانب سے الیکشن کمیشن آف پاکستان میں عمران خان کی کامیابی کو چیلینج کیا گیا اور مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ حلقہ این اے-131 میں سیکڑوں ووٹ مسترد ہوئے جو پریزائیڈنگ افسر نے دانستہ طور پر مسترد کیے۔

اس کے علاوہ درخواست میں یہ بھی کہا گیا تھا کہ اس حلقے سے نتائج مسترد ووٹوں اور دوبارہ گنتی کا عمل مکمل ہونے تک نہ جاری کیے جائیں۔

این اے 131 پر پی ٹی آئی کے کئی رہنماؤں کی دلچسپی، کاغذات نامزدگی جمع کرادیے

دوسری جانب این اے 131 پر پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی) کے دو رہنما ولید اقبال اور غلام محی الدین نے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے۔

ولید اقبال نے دعویٰ کیا کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے عام انتخابات سے قبل سیٹ چھوڑنے پر انہیں متوقع امیدوار قرار دیا تھا۔

علاوہ ازیں غلام محی الدین کا کہنا تھا کہ عوام نے الیکٹ ایبل کو مسترد کردیا اور وہ پی ٹی آئی کے اصل چہروں کو پہنچانتے ہیں۔

سابق صدر پرویز مشرف کی کابینہ کا حصہ بننے والے اور بعدازاں پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کرنے والے ہمایوں اختر خان نے بھی این اے 131 کے لیے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے۔

انہوں نے مؤقف اختیار کیا کہ ’سعد رفیق کے مقابلے میں وہ ہی امیدوار جیت سکتا ہے جو انتخابی مہم میں پیسہ خرچ کر سکے‘۔


اس خبر کےحوالےسےاپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں




From Google

WordPress Video Lightbox Plugin