پاکستان عدالت

لاہور: ڈسٹرکٹ پراسیکیوٹرکی نوکری نہ ملنے پر مایوس وکیل کی لاہور رجسٹری کے باہر خود سوزی کی کوشش

لاہور: سپریم کورٹ لاہور رجسٹری کے باہر ایک وکیل نے ناانصافی کو جواز بناتے ہوئے خود سوزی کی کوشش کی تاہم پولیس اہلکاروں نے اسے بچالیا۔

واضح رہے کہ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اس وقت سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں تھے اور وہ متفرق کیسز کی سماعت کر رہے تھے۔

اسی دوران محمد بلال نامی وکیل نے سپریم کورٹ لاہو رجسٹری کے باہر پیٹرول چھڑک کر خود کو آگ لگانے کی کوشش کی، تاہم وہاں ڈیوٹی پر تعینات پولیس اہلکاروں نے اسے بچالیا۔

پولیس اہلکاروں نے وکیل کو حراست میں لے کر اسے تھانہ پرانی انار کلی منتقل کردیا۔

محمد بلال کا تعلق ملتان سے ہے، اور اس نے پولیس کے سامنے مؤقف اختیار کیا کہ اس نے اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافی سے تنگ آکر انتہائی قدم اٹھانے کا فیصلہ کیا۔

وکیل نے بتایا کہ اس نے پبلک سروس کمیشن کے امتحان میں میرٹ حاصل کیا اور اس کے باوجود اسے ڈسٹرکٹ پراسیکیوٹر تعینات نہیں کیا گیا۔

محمد بلال نے کا کہنا تھا کہ وہ انصاف کے حصول کے لیے در،در کی ٹھوکریں کھاتا رہا لیکن اسے انصاف نہیں ملا۔

خود سوزی کی کوشش کرنے والے وکیل نے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار سے مطالبہ کیا کہ وہ انہیں اس معاملے میں انصاف دلوائیں۔

WordPress Video Lightbox Plugin