fbpx
پاکستان سیاست

زرداری کی گرفتاری سے حکومت کا کوئی تعلق نہیں: وزیر خارجہ

نیب ہمارے ماتحت ہے نہ ہم اسکو کوئی ہدایت دے سکتے ہیں : شاہ محمود قریشی

قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ نیب ہمارے تحت نہیں ہے وہ ایک خود مختار ادارہ ہے اور اس کا حکومت کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے، حکومت سمجھتی ہے کہ نیب کو کسی دباﺅ کیلئے استعمال نہیں ہونا چاہئے، ہم سمجھتے ہیں کہ نیب کو بلا امتیاز احتساب کرنا چاہئے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ ان کا خیال ہے کہ حکومت نیب کی بیساکھیوں پر کھڑی ہے، نیب جو بھی چاہے شفاف انداز میں کرے، حکومت اس میں رکاوٹ نہیں بنے گی۔ میں شہباز شریف کا شکرگزار ہوں کہ میری بات کو تحمل کے ساتھ سنا گیا۔

دوسری طرف اسد عمر نے قومی اسمبلی میں تقریر کے دوران کہا کہ سیاستدان سے سوال کرو تو جمہوریت، جرنیل سے سوال کرو تو ملکی سلامتی، جج سے پوچھو تو عدلیہ کی آزادی، مولوی سے سوال کرو تو مذہب خطرے میں پڑ جاتا ہے۔

تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ شہباز شریف نے کہا کہ بجلی کے منصوبے سستے ترین منصوبے تھے، اگر یہ سستے ترین منصوبے تھے تو نیپرا حکومت کو یہ کیوں کہہ رہا ہے کہ یہ منصوبے اتنے مہنگے تھے کہ پرانے نرخ سے قیمت پوری نہیں ہوگی بلکہ 2 روپے قیمت میں اضافہ کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ عرصے میں پاکستان میں 7 ارب ڈالر کی براہ راست سرمایہ کاری ہوئی ہے جس میں سے چار ارب ڈالر چین کی براہ راست سرمایہ کاری ہے۔ کبھی نہیں کہا کہ سی پیک کے تمام منصوبے شفاف تھے۔

سابق وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کے 27 ارب ڈالر کے قریب پراجیکٹس مکمل ہوچکے ہیں۔ حقیقت یہ ہے کہ ان پراجیکٹس میں چین نے پاکستان کی حکومت کو اچھے ریٹ پر قرضے دیے جنہیں دوستانہ قرضے کہا جاسکتا ہے جس پر تمام پاکستانی چین کے شکر گزار ہیں۔ 
وفاقی وزیرداخلہ اعجاز شاہ کا کہنا تھا کہ حکومت زرداری کے معاملے پر کچھ نہیں کرسکتی، نیب ہماری حکومت نے نہیں بنائی، آصف زرداری کی گرفتاری سے حکومت کا کوئی تعلق نہیں ہے۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے  مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں 

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.




From Google