fbpx
پاکستان دہشتگردی

انسانیت کی تذلیل، ایک اور کمسن ملازمہ امارت کی بھینٹ چڑھ گئی

 مالکن کے گھریلو ملازمہ بچی پر بدترین تشدد سے معصوم جاں بحق ہوگئی، ورثاء نے لاہور روڑ بلاک کر کے پولیس اور ملزمان کے خلاف احتجاج شروع کر دیا۔

ظلم کا یہ واقع گوجرانوالہ کے علاقہ راہوالی میں پیش آیا جہاں ظالم مالکن نے شیخوپورہ کی رہاشی 10 سالہ ملازمہ بچی نیلم کو گھر کا کام نہ کرنے پر بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا اور پھر اسے حادثہ ظاہر کرنے کے لئے گھر کی چھت سے دھکا دے دیا۔ بچی کے بے ہوش ہونے پر اسے خود ہی ہسپتالوں میں لے کر جاتے رہے جہاں بچی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔

بچی کے جاں بحق ہونے پر اس کی والدہ کو اطلاع دی گئی۔ واقعے کے خلاف بچی کے والدین اور اہل علاقہ نے شیخوپورہ لاہور روڑ پر احتجاج کیا جہاں پولیس تھانہ ہاوسنگ کالونی کے ایس ایچ او نے معاملہ کو نمٹانے کے بجائے مظاہرین کو دھمکیاں دیں اور گالیاں نکالیں جس پر مظاہرین مشتعل ہو گئے اور پولیس کے خلاف احتجاج کرتے رہے۔ مظاہرین نے مطالبہ کیا ہے کہ بچی کو تشدد کرنے والی ظالم مالکن کو فوری گرفتار کیا جائے۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے  مالی تعاونکیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.




From Google