fbpx
پاکستان سیاست

حکومت سے مقابلہ کریں گے اور دوبارہ حکومت میں آئیں گے، جہاں یہ آئیں گے وہاں ہم لڑیں گے، سابق صدر آصف زرداری

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے 100 روز میں عوام کے لیے کچھ نہیں کیا۔

آصف زدرای نے گڑھی خدا بخش میں جلسے سے خطاب کے آغاز میں کہا کہ آج حال ہی میں اس حکومت نے ہمیں للکارا ہے،میں ان پھٹے ڈھولوں کو اور لاڈلے کو بتادینا چاہتا ہوں کہ ہم ان کے بنائے ہوئے ہتھکنڈوں سے نہیں ڈرتے، ہم نے پہلے بھی ان ہتھکنڈوں کا مقابلہ کیا ہے اور اب بھی کریں گے۔

سابق صدر نے کہا کہ ہم اس حکومت سے مقابلہ کریں گے اور دوبارہ حکومت لیں گے، ہم سب بھٹو ہیں اور ہم لڑنے کو تیار ہیں، جہاں یہ آئیں گے وہاں ہم لڑیں گے۔

انہوں نے کہا کہ جہاں تک بلاول کا سوال ہے وہ بینظیر بھٹو اور میرا بیٹا ہے، اس کو تم کیا ڈراؤ گے اور کیا کرو گے، یہ جتنے بھی ہیں ان سب کو پیپلز پارٹی اکیلے ہی ان کا مقابلہ کریں گے۔

پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین کا کہنا تھا کہ کسی اور جماعت میں ان کا مقابلہ کرنے کی ہمت نہیں لیکن ہمارے جیالوں میں یہ ہمت ہے کہ ہم ان کا مقابلہ کریں۔

سابق صدر کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے 100 روز میں دیا کیا ہے، ہم نے’ 100 روز میں بی بی کارڈ دیا، گندم کی قیمتیں بڑھائیں، 73 کے آئین پر کام کیا اور پرویز مشرف کو صدارت سے باہر نکال دیا تھا‘۔

تحریک انصاف کی حکومت کو مخاطب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ یہ کہتے ہیں کہ 100 دن بہت کم ہیں، جو کام کرنا جانتا ہو اس کے لیے یہ دن بہت ہے جبکہ جنہیں کام نہ آتا ہو ان کے لیے بہت کم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’سوائے ٹی وی پر بکواس کرنے کے انہیں کچھ نہیں آتا، ہم ان سے مقابلہ کریں گے اور جمہوری طریقوں سے مقابلہ کرتے ہوئے ٹھپہ مار کر دوبارہ الیکشن جیتیں گے‘۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

WordPress Video Lightbox Plugin