پاکستان کرائم سٹوری

2012 میں قتل ہونے والے جماعت اسلامی کے رہنما پرویز محمود کے قتل کا معمہ 6 سال بعد حل ہو گیا

 سابق ٹاؤن ناظم اور جماعت اسلامی رہنما پرویز محمود کے قاتل کے اہم انکشافات سامنے آ گئے، 6 سال پہلے ملزمان نے متحدہ کراچی تنظیمی کمیٹی کے سابق انچارج حماد صدیقی کے کہنے پر پرویزمحمود کا قتل کیا۔

6 سال بعد سابق لیاقت آباد ٹاؤن ناظم اور جماعت اسلامی رہنما کے قتل کا معمہ حل ہوگیا، 2012 میں ڈاکٹر پرویز محمود کو قتل کرنے والا ٹارگٹ کلر قانون کی گرفت میں آگیا۔ تفتیش میں ٹارگٹ کلر مسعود علی عرف کالا نے سنسی خیز انکشافات کئے، ملزم نے بتایا کہ ڈاکٹر پرویز محمود کو کراچی تنظیمی کمیٹی کے سابق انچارج حماد صدیقی کے کہنے پر کے ڈی اے چورنگی کے قریب نشانہ بنایا۔

جماعت اسلامی رہنما کے ہمراہ انکے دوست خلیق اللہ بھی جاں بحق ہوئے تھے۔ ٹارگٹ کلنگ ٹیم میں عمران اعجاز نیازی، طاہر قادیانی، زبیر عرف پپا، عبد الرحمان قریشی شامل تھے۔ ساتھیوں میں جوائنٹ سیکٹر انچارج ریحان، آصف آلٹو، فیضان الیاس، سمیر نائی اور شکیل موٹا شامل ہیں۔

30 نومبر کو گرفتار ہونے والے مسعود کالا نے اعتراف کیا کہ ناظم آباد اور رضویہ سوسائٹی میں احکامات ملنے پر متعدد افراد کی ٹارگٹ کلنگ کی۔ عدالت نے مفرور ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے، 5 جنوری کو ملزمان کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

WordPress Video Lightbox Plugin