fbpx
پاکستان سیاست

حکومت اور اپوزیشن کا شہبازشریف کو چیئرمین پی اے سی بنانے پر اتفاق

 قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف سے حکومتی وفد نے ملاقات کی جس کے دوران پبلک اکاؤنٹس کمیٹی، قائمہ کمیٹیوں کی تشکیل پرمشاورت کی گئی اور شہبازشریف کو چیئرمین پی اے سی بنانے پر اتفاق کیا گیا۔

آج قومی اسمبلی اجلاس کے بعد حکومتی وفد نے شہبازشریف سے ان کے چیمبر میں ملاقات کی۔ حکومتی وفد نے مسلم لیگ ن کے آڈٹ اعتراضات کا جائزہ لینے کیلئے خصوصی کمیٹی بنانے کا مطالبہ تسلیم کر لیا۔ اس دوران قائمہ کمیٹیوں کی تشکیل پر بھی مشاورت ہوئی اور  شہبازشریف کو چیئرمین پی اے سی بنانے پر بھی اتفاق کر لیا گیا۔

ملاقات کے بعد وزیر دفاع پرویز خٹک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ن لیگ کے آڈٹ اعتراضات کا جائزہ لینے کے لئے ذیلی کمیٹی بنے گی،جس کے سربراہ کاتعلق تحریک انصاف سے ہو گا۔

قبل ازیں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے آج قومی اسمبلی اجلاس سے خطاب میں کہا تھا کہ لیگی دور حکومت کے معاملات دیکھنے کیلئے ذیلی کمیٹی بنا دیتے ہیں، قائمہ کمیٹیاں بنیں گی تو ایوان چلے گا۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی حکومت ماضی قریب میں پبلک اکاونٹس کمیٹی کا چئیرمین اپوزیشن ارکان میں سے منتخب کرنے کا سختی سے انکار کرتی رہی ہے تاہم اب اچانک یوٹرن لے کر حکومت نے اپنے ہی موقف کی نفی کر ڈالی۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.




From Google