fbpx
پاکستان معیشت

گیس کا بحران: وزیراعظم نے چار رکنی فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی قائم کر دی

 فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی سوئی ناردرن اور سوئی سدرن کمپنیوں کے سسٹم کی ناکامی کا جائزہ لے کر 72 گھنٹوں میں اپنی رپورٹ وزیراعظم عمران خان کو پیش کرے گی۔

وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت اعلیٰ سطح اجلاس کا ہوا جس میں سردیاں آتے ہی ملک میں گیس بحران کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعظم نے بحرانی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے چیئرپرسن اوگرا عظمیٰ عادل کی سربراہی میں چار رکنی فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی قائم کر دی ہے۔

کمیٹی گیس بحران پر ایم ڈی سوئی ناردرن گیس اور سوئی سدرن کے خلاف الزامات اور وزارت سے معلومات چھپانے کے الزامات کی تحقیقات کرے گی۔

کمیٹی دونوں کمپنیوں کے سسٹم کی ناکامی کا بھی جائزہ لے کر 72 گھنٹوں میں اپنی رپورٹ وزیراعظم کو پیش کرے گی۔ وزیرِ پٹرولیم ڈویژن غلام سرور خان نے بریفنگ میں وزیراعظم عمران خان کو بتایا کہ گیس کے حالیہ بحران کی ذمہ دار سوئی ناردرن اور سوئی سدرن ہیں، دونوں کمپنیوں نے حکومت سے بعض گیس کمپریسر پلانٹس کی خرابی چھپائی اور دسمبر میں گیس کی طلب سے متعلق بھی نااہلی کا مظاہرہ کیا۔

وزیراعظم نے حکم دیا کہ دونوں کمپنیوں کے ایم ڈیز کے خلاف فوری انکوائری کی جائے اور وزارت پیٹرولیم صارفین کو گیس کی فراہمی پر موثر منصوبہ بندی کرے۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ شیڈول کیے گئے آر ایل این جی کے آٹھ کارگو بروقت پاکستان پہنچ جائیں گے۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.




From Google