پاکستان طرز زندگی

سوار محمد حسین شہید نشان حیدر کا 47 واں یوم شہادت

راولپنڈی: سوار محمد حسین شہید نشان حیدر کی آج سینتالیسویں برسی ہے، راولپنڈی کے قریب دولتالا میں پاک فوج کے چاق و چوبند دستے نے شہید کو سلامی پیش کی، وطن کے اس جری بیٹے نے 1971ء کی جنگ میں دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر جواں مردی سے مقابلہ کیا۔

سوار محمد حسین شہید نشان حیدر کی 1971 کی جنگ میں تعیناتی شکر گڑھ سیکٹر میں ہوئی، بنیادی کام وائرلیس پر احکامات وصول کرنا اور آگے پہنچانا تھا لیکن ساتھی سپاہیوں کو فرنٹ لائن پر لڑتا دیکھ کر میدان جنگ میں لڑنے کا جذبہ پیدا ہوا۔جرات و استقامت کے اس پیکر نے بے مثل جرات و بہادری کا مظاہرہ کیا، اپنی ذہانت اور حکمت عملی سے دشمن کو ناکوں چنے چبوائے۔ 10 دسمبر 1971ء کو دشمن کی گولیوں نے ان کا سینہ چھلنی کر دیا اور وطن کا یہ جری بیٹا شہادت کے مرتبے پر فائز ہوا۔سوار محمد حسین کی بے مثال جرات و بہادری کے اعتراف میں انہیں اعلی ترین فوجی اعزاز نشان حیدر سے نوازا گیا۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.