fbpx
پاکستان عدالت

ایف بی آر نے علیمہ خان کے اثاثوں کی تفصیلات جمع کرا دیں

 ایف بی آر حکام نے علیمہ خان کے اثاثوں کی تفصیلات سپریم کورٹ میں جمع کرا دیں۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ علیمہ خان نے دبئی کے فلیٹ پر ایمنسٹی نہیں لی، اپارٹمنٹ قرض ادا کر کے بیچ دیا گیا۔ چیف جسٹس نے ہدایت کی کہ کارروائی کو ریکارڈ کا حصہ بنا دیا جائے۔

 چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے علیمہ خان کی بیرون ملک جائیدار کے معاملے پر سماعت کی۔ چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ علیمہ خان کو طلبی کے لئے کب نوٹس بھیجا گیا اور اب تک ایف بی آر نے کیا کارروائی کی۔ ایف بی آر کے کمشنر ان لینڈ ریونیو ڈاکٹر اشتیاق نے دبئی کی جائیداد، کرایہ نامہ کے بارے تفصیلی سربمہر رپورٹ پیش کی اور بتایا کہ ایف بی آر نے 8 فرروی کونوٹس بھیجا، بیرون ملک ہونے کی وجہ علیمہ خان کو نوٹس موصول نہیں ہوئے۔

عدالتی استفسار پر کمشنر نے بتایا کہ بینک سے قرض لے کر فلیٹ خریدا اور کرایہ کے ذریعے قرضے کی ادائیگی کی گئی اور پھر یہ فروخت کر دیا۔ کمشنر ان لینڈ ریونیو نے واضح کیا کہ بیرون جائیدار کی خریداری ظاہر کرنا لازمی ہے، ایف بی آر کو ان کے نفع اور نقصان سے کوئی غرض نہیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے درخواست پر مزید سماعت 6 دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے مکمل ریکارڈ طلب کر لیا۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

WordPress Video Lightbox Plugin