پاکستان سیاست

ملک نازک صورتحال سے دوچار، وقت ہے مل کر بیٹھیں: فضل الرحمان

 جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ ملک نازک صورت حال سے دوچار ہے، وقت ہے کہ مل کر بیٹھیں اور مسائل پر بات کریں، کہتے ہیں کرتارپور میں کوئی اور تقریر کرتا تو اسے غدار کہا جاتا۔

پشاور میں جے یو آئی سیکرٹریٹ میں قبائل کانفرنس سے خطاب میں مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھاکہ کرتارپور میں کی جانے والی تقریر اگر نواز شریف کرتے تو انہیں غدار کہا جاتا، کوئی اور ہندوستان کے ساتھ دوستی کی بات کرے تو اسے بھی غدار کہا جاتا ہے۔مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ انڈیا کے ساتھ دوستی کا راستہ کھولاجا رہا ہے لیکن ہندوستان نے سارک کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کا واضح جواب دے دیا ہے۔جے یو آئی سربراہ کا کہنا تھا کہ ہندوستان کی سرحد کو پرامن بنایا جا رہا ہے اور پاک افغان سرحد پر جنگ کے محاذ کی طرف جا رہے ہیں، یہ کون سی سیاست ہے۔مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ فاٹا انضمام کا قانون آنکھیں بند کر کے پاس کیا گیا اور فاٹا میں اضطراب پیدا کیا جا رہا ہے۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

WordPress Video Lightbox Plugin