دنیا فلم

رجنی کانت کی 2.0 نے ریلیز سے قبل ہی 370کروڑ کما لیئے

اس وقت بھارت میں سب سے زیادہ بزنس کرنے والی فلم کا ریکارڈ دنگل اور باہو بلی 2 کے پاس ہے مگر لگتا ہے کہ یہ دونوں ہی ایک نئی فلم سے مقابلہ ہارنے والی ہیں۔

رجنی کانت بھارت کا وہ نام ہے جس کے کروڑوں پرستار ہیں اور ان کی فلموں کا بے صبری سے انتظار کیا جاتا ہے اور ان کی نئی فلم 2.0 نے ریلیز سے قبل ہی بزنس کے نئے ریکارڈز بنالیے ہیں۔

رجنی کانت کی اس فلم میں اکشے کمار بھی اہم کردار میں نظر آئیں گے اور اسے بھارت کی تاریخ کی مہنگی ترین فلم قرار دیا جارہا ہے جس کی تیاری پر 550 کروڑ انڈین روپے سے زائد خرچ ہوئے۔

تاہم اس فلم نے ریلیز سے قبل ہی اپنے بجٹ کا لگ بھگ 75 فیصد حصہ یعنی 370کروڑ روپے سے زائد کمالیے ہیں۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق 2.0 رجنی کانت کی 2010 کی فلم اینتھران (ہندی ورژن کا نام روبوٹ) کا سیکوئل ہے جو کہ 29 نومبر کو دنیا بھر میں ریلیز ہوگا۔

اس فلم میں رجنی کانت ڈبل رول جبکہ ولن کے روپ میں اکشے کمار نظر آئیں گے۔

رپورٹ کے مطابق اس فلم نے ریلیز سے قبل ہی سیٹلائیٹ رائٹس، ڈیجیٹل رائٹس اور دیگر کے ذریعے 370 کروڑ انڈین روپے کمالیے ہیں اور تجزیہ کاروں کو یقین ہے کہ یہ فلم ریلیز کے پہلے دن ٹھگز آف ہندوستان کا 50 کروڑ انڈین روپے بزنس کا ریکارڈ بھی آسانی سے توڑ دے گی۔

ڈائریکٹر شنکر کی یہ فلم بھارت میں 29 نومبر کو ریلیز ہورہی ہے اور تجزیہ کاروں کے خیال میں یہ پہلے دن ہی مختلف ورژن میں سو کروڑ انڈین روپے کا بزنس کرسکتی ہے اور باہو بلی 2 کا ریکارڈ بھی توڑ سکتی ہے۔

اس سے قبل باہو بلی 2 نے گزشتہ سال ریلیز کے پہلے دن مجموعی طور 100 کروڑ روپے سے زائد کا بزنس کیا تھا۔

2.0 کو بھارت میں 7 ہزار اسکرینز میں ریلیز کیا جائے گا جو کہ باہو بلی 2 سے زیادہ ہے جو کہ 6500 تھی جبکہ دنیا بھر میں 3 ہزار سے زائد اسکرینز میں اسے ریلیز کیا جائے گا۔

یہ بھارت کی پہلی فلم ہے جسے مکمل طور پر تھری ڈی میں فلمایا گیا ہے۔

فلم میں رجنی کانت اور اکشے کمار کے ساتھ ساتھ ایمی جیکسن بھی اہم کردار میں نظر آئیں گی۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

Tags

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.