پاکستان سیاست

چینی قونصلیٹ پر حملہ: فیصل واوڈا پر پستول کے ہمراہ آمد پر تنقید

کراچی میں چینی قونصلیٹ پر حملے کے بعد وفاقی وزیر اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما فیصل واوڈا کی جائے وقوعہ پر ذاتی پستول کے ہمراہ آمد سوشل میڈیا پر کڑی تنقید کی نذر ہوگئی۔

حملے کے کچھ دیر بعد ہی وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا اپنی پستول اور بلٹ پروف جیکٹ کے ہمراہ پہنچے۔

 ‘ٹوئٹر’ پر فیصل واوڈا کی ’بہادری‘ مذاق بن گئی۔

بے نامی ٹوئٹر اکاؤنٹ پر فیصل واوڈا نے کڑی تنقید کرنے والوں کو جواب دیا کہ ’میں وہاں شروع سے آخر تک رہا اور بطور پاکستانی مجھے کوئی خوف نہیں تھا‘۔

فیصل واوڈا نے لکھا کہ ’میں اپنا لائسنس یافتہ اسلحہ اپنے تحفظ کے لیے استعمال کرنے کا پورا حق رکھتا ہوں، کم از کم میں بزدلوں کی طرح کمپیوٹر کے ‘کی بورڈ’ کے پیچھے نہیں چھپا رہا‘۔

انکا کہنا تھا کہ ’بطور وفاقی وزیر یہ میرا فرض ہے کہ میں وفاقی ایجنسیوں کی مدد کروں۔’


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.