fbpx
بدعنوانی پاکستان سیاست قانون و انصاف

عوامی نیشنل پارٹی نے نیب ترمیمی آرڈیننس مسترد کر دیا

Asfand Yar Wali - PAKasia

پشاور: عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی خان نے نیب ترمیمی آرڈیننس کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیراعظم نے اپنے لوگوں کو بچانے یہ ترمیم کی ہے۔

میڈیا کو جاری بیان میں ان کا کہنا تھا کہ سیلیکٹڈ وزیر اعظم نے پشاور بی آر ٹی، مالم جبہ اسکینڈل اور ہیلی کاپٹر کیس سے بچنے کے لیے نیب آرڈینس میں ترمیم کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت اگر نیب قانون میں ترمیم چاہتی ہے تو اسے پارلیمنٹ کے ذریعے کرے اور ایسا قانون لائے جو شفاف ہو اور سب کے لیے برابر ہو۔

اے این پی کے سربراہ نے کہا کہ وزیراعظم نے ایوان صدر کو آرڈیننس فیکٹری بنا دیا ہے، آئین سے متصادم قانون سازی نہیں ہو سکتی۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو سمجھنا چاہیئے کہ پارلیمنٹ کی موجودگی میں آرڈیننس لانا پارلیمنٹ کی تضحیک ہے، انہوں نے پارلیمنٹ کو بے توقیر اور غیر فعال کر دیا ہے۔

اسفند یار ولی نے کہا کہ آئین کے تحت بننے والا قانون سب کے لیے برابر ہوتا ہے، یہ دنیا میں انہونی مثال ہے کہ آئین سے متصادم قانون سازی کی جا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کو علم نہیں کہ پارلیمنٹ کے غیر فعال ہونے سے آئین بھی غیر فعال ہو جاتا ہے جبکہ ملک آئین کے مطابق چلتا ہے۔

عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ نے کہا کہ سیلیکٹڈ وزیر اعظم اداروں، جمہوریت اور آئین کو نقصان پہچانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

About the author

ویب ڈیسک

ہمارا ویب ڈیسک پاکستان اور ایشیاء سمیت دُنیا بھر میں رُونما ہونے والے حالات و واقعات پر گہری نظر رکھتا ہے اور آپ کو باخبر رکھنے کے لیے خبروں کا انتخاب کر کے انہیں موزوں پیرائے اور اسلوب میں ڈھال کر آپ کے پیشِ نظر کرتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.