fbpx
پاکستان کرائم سٹوری

سندھ ہائی کورٹ: شاہ زیب قتل کیس میں سزاؤں کے خلاف اپیل پر فیصلہ محفوظ

سندھ ہائی کورٹ نے شاہ زیب قتل کیس میں مرکزی ملزمان شاہ رخ جتوئی اور دیگر کی سزاؤں کے خلاف اپیلوں پر فریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

سندھ ہائی کورٹ میں جسٹس محمد علی مظاہر کی سربراہی میں ڈویژن بنچ نے سماعت کے دوران مدعی کے وکیل محمود عالم رضوی نے موقف اپنایا کہ مدعی مقدمہ اور مقتول کے والد کا انتقال ہوچکا ہے، مدعی کے پسماندگان میں بیوہ اور دو بیٹیاں ہیں اور تینوں خواتین بیرون ملک ہیں اور عدالت نہیں آنا چاہتیں، عدالتی نمائندہ اسکائپ یا کسی اور طرح رابطہ کرکے سمجھوتے کی تصدیق کرسکتے ہیں۔

سرکاری وکیل ظفر احمد نے اپنے دلائل میں کہا کہ سرکار نے ملزمان اور مدعی کے درمیان سمجھوتے پر اعتراض کیا تھا جبکہ اسپیشل پبلک پراسیکیوٹر کی رضامندی کے بغیر سمجھوتا پیش نہیں کیا جاسکتا، مدعی کے وکلا کی قانونی حیثیت پر بینچ کے تحفظات تھے۔

اس موقع پر عدالت نے کہا کہ مقتول کے ورثا کا ایڈریس ہی کم سے کم ریکارڈ پر ہونا چاہیے جس پر وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ورثا بیرون ملک مقیم ہیں، انہیں ملزمان سے نہیں بلکہ سوشل میڈیا سے خطرہ ہے۔

سندھ ہائی کورٹ کے بنچ نے استفسار کیا کہ کس سے خطرہ ہے اور کب تک چھپتے پھریں گے، جن سے خطرہ ہے ان کے خلاف مقدمہ درج کرائیں۔

مدعی کے وکیل نے کہا کہ سمجھوتے کے بعد سوشل میڈیا دشمن ہوگیا ہے اس لیے وہ کس کس سے لڑیں گے، ایک مرتبہ سمجھوتہ ہو جائے تو ورثا منحرف نہیں ہوسکتے۔

ان کا کہنا تھا کہ سیشن عدالت انکوائری کرکے سمجھوتے کو دباؤ سے پاک قرار دے چکی ہے جس کے بعد ملزمان کے وکلا نے سمجھوتا عدالت میں پیش کیا جبکہ وکیل صفائی نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ہمارے دلائل مکمل ہوچکے اور تحریری دلائل بھی جمع کرادیے گئے ہیں۔

عدالت نے دلائل مکمل ہونے کے بعد کیس میں نامزد ملزمان شاہ رخ جتوئی، سراج تالپور، سجاد تالپور اور غلام مرتضی لاشاری کی سزا کے خلاف اپیلوں پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے  مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.




From Google