fbpx
پاکستان ثقافت

50/50 : بسنت منانے کا ابھی حتمی فیصلہ نہیں ہوا، چیف سیکرٹری پنجاب

 چیف سیکرٹری پنجاب یوسف نسیم کھوکھر نے کہا ہے کہ جب تک کوئی انشورنس نہیں ہوتی ،حکومت کوئی فیصلہ نہیں کر سکتی۔

چیف سیکرٹری پنجاب یوسف نسیم کھوکھر نے لاہور میں بسنت منانے کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ابھی حکومت نے اصولی فیصلہ کیا ہے جسے حتمی نہیں کہا جا سکتا۔

یوسف نسیم کھوکھر نے کہا کہ کسی بھی انسانی جان کی کوئی قیمت نہیں لگائی جا سکتی، سابق کمیٹیوں نے بسنت کی مخالفت کی، ہم اس حوالے سے معاملات دیکھ رہے ہیں۔

ادھر لاہور ہائیکورٹ میں پنجاب حکومت کے بسنت منانے کے اعلان کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی، عدالت نے پنجاب حکومت کی جانب سے بسنت منانے کی اجازت کیخلاف دائر درخواست سماعت کیلئےمنظور کرلی۔ جسٹس امین الدین خان نے صفدر شاہین پیرزادہ ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ بسنت خونی کھیل کی شکل اختیار کر گیا تھا، جس کی وجہ سے پابندی لگائی گئی تھی، گردن پر ڈور پھرنے کے واقعات سے بے شمار قیمتی جانیں ضائع ہوئیں۔ درخواست میں استدعا کی گئی کہ عدالت حکومت کی جانب سے بسنت کی اجازت دینے کا اقدام کالعدم قرار دے۔

جسٹس امین الدین نے تمام فریقین کو بسنت منانے کی اجازت دینے سے متعلق تحریری جواب جمع کرانے کی ہدایت کر دی۔ عدالت نے پنجاب حکومت سمیت تمام فریقین کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے سماعت 26 دسمبر تک ملتوی کر دی۔


پاک ایشیاء ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ ہماری صحافت کو سرکاری اور کارپوریٹ دباؤ سے آزاد رکھنے کے لیے مالی تعاون کیجیے نیز اس خبر کے حوالے سے اپنی آراء کا اظہار کمنٹس میں کریں اور شیئر کر کے ہماری حوصلہ افزائی کریں

About the author

عدیل رحمان (معاون مُدیر)

عدیل رحمان پاک ایشیاء میں بطور معاون مُدیر کے طور پر اپنی خدمات ادا کر رہے ہیں- یہ پاک ایشیاء کے ابتدائی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور انتہائی جانفشانی سے کام کرتے ہیں اللہ تعالیٰ نے انہیں منفرد تخلیقی صلاحیتوں سے نوازا ہے جس کا اظہار اکثر اُن کی خبروں کی سُرخیوں سے بھی لگایا جا سکتا ہے۔

Add Comment

Click here to post a comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.




From Google